منی لانڈرنگ کیس: حسین لوائی کی رہائی کی روبکار جاری

احتساب عدالت نے جعلی بینک اکاؤنٹس اسکینڈل کے مرکزی ملزم حسین لوائی کو ضمانت پر رہا کرنے کی روبکار جاری کردی۔ اسلام آباد ہائیکورٹ نے 10 لاکھ روپے کے مچلکوں کے عوض ضمانت منظور کی تھی۔

میگا منی لانڈرنگ ریفرنس کے مرکزی کردار اور پارک لین ریفرنس میں سابق صدر آصف زرداری کے شریک ملزم حسین لوائی کی ضمانتی مچلکے جمع کرانے پر رہائی کی روبکار جاری کردی گئی۔

مزید جانیے : جعلی اکاؤنٹس کیس: مرکزی ملزم حسین لوائی کی ضمانت منظور

میگا منی لانڈرنگ ریفرنس کے مرکزی ملزم حسین لوائی جولائی 2018ء سے 3 سال سے جوڈیشل ریمانڈ پر جیل میں تھے، ان پر اپنے نجی بینک میں ماتحتوں کے ساتھ مل کر جعلی اکاؤنٹس چلانے اور آصف زرداری کے فرنٹ مین کی حیثیت سے منی لانڈرنگ کا سارا منصوبہ تیار کرنے کا الزام ہے۔

یہ بھی دیکھیں: بینکنگ کورٹ میں حسین لوائی اور آصف زرداری میں سرگوشیاں

اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس عامر فاروق کی سربراہی میں 2 رکنی بینچ نے حسین لوائی کی درخواست ضمانت منظور کرتے ہوئے انہیں 10 لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکے داخل کرانے کی ہدايت کی تھی۔

متعلقہ خبریں