موثر اپوزیشن کیلئے قائد حزب اختلاف کی موجودگی ضروری ہے،بلاول بھٹو

Bilawla Bhutto

فوٹو: آن لائن

پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو کا کہنا ہے کہ اپوزیشن موثر اسی وقت ہوتی ہے جب قائد حزب اختلاف ایوان میں موجود ہو۔
اسلام آباد میں منگل کو قومی اسمبلی اجلاس کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آج کے اجلاس میں اپوزیشن جماعتوں کے کچھ اراکین موجود نہیں تھے جس سے اچھا پیغام نہیں گیا جبکہ ایوان میں اپوزیشن کے موثر کردار کے لیے ضروری ہے کہ اپوزیشن لیڈر اجلاس میں شریک ہو۔
بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی نے شہبازشریف سے کیا اپنا وعدہ پورا کیا اور آج کے اجلاس میں ہمارے تمام اراکین شریک تھے۔
بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ بجٹ اجلاس میں نہ ہمیں بولنے کی اجازت ملی اور نہ ہی ہمارا ووٹ گنا گیا۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ اسپیکر اسد قیصر نے گنتی کے حوالے سے ہماری درخواست بھی مسترد کردی۔
انہوں نے کہا کہ حکومتی بینچز سے اپوزیشن لیڈر پر حملہ کیا گیا اگر اس وقت بھی اسپیکر کے خلاف تحریک عدم اعتماد نہیں لائیں گے تو کب لائیں گے۔
بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ اپوزیشن اراکین اسمبلی پر حملہ برداشت نہیں کر سکتی اور اسپیکر کو اس کی سیاسی قیمت ادا کرنی ہوگی۔
انہوں نے کہا کہ یہ اسمبلی بھی دھاندلی کی بنیاد پر بنی تھی اور بجٹ کی منظوری لینے کے عمل میں بھی دھاندلی کی جارہی ہے۔
بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ اس حکومت کی کوئی اخلاقی حیثیت نہیں ہے اور ہم بجٹ کے خلاف کراچی سے کشمیر تک اواز اٹھائیں گے اور عوام کو بتائیں گے کہ حکومت کی معاشی ترقی کے دعوے جھوٹے ہیں۔
چیئرمین پیپلزپارٹی کا کہنا تھا کہ قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس میرے مطالبے پر بلایا گیا ہے اس لیے میں اس اجلاس میں شرکت کروں گا۔

متعلقہ خبریں