مینگو ڈپلومیسی ناکام ہونے کی انڈین میڈیا کی خبریں بے بنیاد: پاکستان

اتوار 13 جون 2021 20:21

انڈین میڈیا نے دعویٰ کیا تھا کہ چین اور امریکہ سمیت کئی ممالک نے پاکستان کی جانب سے بھیجے گئے آموں کے تحفے قبول کرنے سے انکار کر دیا ہے۔ (فوٹو: عرب نیوز)

پاکستان کے دفترخارجہ نے انڈین میڈیا کی اس رپورٹس کو مسترد کیا ہے جن میں کہا گیا تھا کہ چین اور امریکہ سمیت کئی ممالک نے پاکستان کی جانب سے ’مینگو ڈپلومیسی‘ کے تحت بھیجے گئے آم لینے سے انکار کر دیا ہے۔
ترجمان دفتر خارجہ زاہد حفیظ چوہدری نے اتوار کو ایک بیان میں کہا کہ ’ہم نے انڈین میڈیا میں کچھ غیر ملکیوں کو پاکستانی آم بھجوانے کی رپورٹس دیکھی ہیں۔‘
مزید پڑھیں
ہم ان رپورٹس کو حقیقت کے برخلاف اور حقائق کے منافی قرار دیتے ہوئے مسترد کرتے ہیں۔ انڈین میڈیا نے غلط اور غیر ذمہ دارانہ خبریں چلائی۔‘
ترجمان کا کہنا تھا کہ ہر برس پاکستان کے صدر بہترین اور معیاری آم بعض چنیدہ ممالک کو بھیجتے ہیں۔ ’یہ آم اچھی شہرت اور تجارتی سفارت کاری کے فروغ کے لیے اچھی ساکھ کے طور پر بھیجے جاتے ہیں۔‘
ترجمان کے مطابق وزارت خارجہ آم بھیجنے کے لیے ممالک کی فہرست ان کے کورنٹائن حالات، صفائی ستھرائی اور پروازوں کی دستیابی دیکھ کر تیار کرتی ہے۔
خیال رہے انڈین میڈیا نے دعویٰ کیا تھا کہ چین اور امریکہ سمیت کئی ممالک نے پاکستان کی جانب سے بھیجے گئے آموں کے تحفے قبول کرنے سے انکار کر دیا ہے۔ ان رپورٹس میں دعویٰ کیا گیا تھا کہ ان ممالک نے اپنے ہاں کورونا وائرس اور قرنطینہ ضوابط کی وجہ سے آموں کے تحفے واپس کر دیے۔
رپورٹس میں مزید کہا گیا تھا کہ پاکستان کی وزارت خارجہ نے 32 سے زائد ممالک کے سربراہان کو آموں کے باکس بطور تحفہ بھیجا تھا۔