نائیجریا کی فوج کے چیف آف سٹاف فضائی حادثے میں ہلاک

نائیجیریا کی فوج کے ٹاپ رینکنگ کمانڈر لیفٹننٹ جنرل ابراہیم اتاہیرو کئی فوجی افسران سمیت جمعے کو فضائی حادثے میں ہلاک ہوگئے۔
فرانسیسی خبر رساں ایجنسی اے ایف پی  نے فضائیہ کے ایک ترجمان کے حوالے سے بتایا کہ نائیجیریا کے ٹاپ رینکنگ آرمی کمانڈر لیفٹننٹ جنرل ابراہیم اس وقت ہلاک ہوگئے جب ان کا طیارہ ملک کے شمال میں گر کر تباہ ہوگیا۔
چیف آف آرمی اسٹاف لیفٹننٹ جنرل ابراہیم اتاہیرو کو جنوری میں نائیجریا کے صدر محمد بخاری نے بڑھتے ہوئے تشدد اور ایک دہائی سے زیادہ عرصے سے جاری عسکریت پسندی سے بہتر طور پر نمٹنے کےلیے مقرر کیا تھا۔

چیف آف آرمی اسٹاف  لیفٹننٹ جنرل ابراہیم کو جنوری میں تعینات کیا گیا تھا( فوٹو اے ایف پی)
فضائیہ کے ترجمان نے  تفصیلات بتائے بغیر تصدیق کی کہ لیفٹننٹ جنرل ابراہیم اتاہیرو اس وقت ہلاک ہوگئے جب ریاست شمالی کاڈونہ میں ان کا طیارہ تباہ ہوگیا۔
چیف آف آرمی سٹاف کے طیارے کے حادثے میں ہلاکت کی خبر اس وقت آرہی تھی جب یہ خبر سامنے آئی تھی کہ نائیجیریا میں عسکریت پسند تنظیم بوکو حرام کے رہنما ابوبکر الشکوی اپنے حریف گروپ کے جنگجوؤں کے ساتھ جھڑپوں کے بعد شدید زخمی ہوگئے تھے۔
نائیجیریا کی فوج 2009 سے شمال مشرق میں شورش کا مقابلہ کر رہی ہے، اس تنازعہ میں چالیس ہزار سے زیادہ افراد ہلاک اور 20 لاکھ کے قریب بے گھر ہوئے ہیں۔