نوازشریف کی 88 کنال زرعی زمین نیلام کردی گئی

زمین فی ایکڑ ایک کروڑ ایک لاکھ روپے میں فروخت

سابق وزیراعظم نوازشريف کی شیخوپورہ میں 88 کنال 4 مرلے (تقریباً 11.05 ایکڑ) زرعی زمين نيلام کردی گئی، جس کی کل مالیت تقریباً 11 کروڑ 50 لاکھ روپے بنتی ہے۔

مفرور ملزم سابق وزیراعظم اور مسلم لیگ ن کے قائد نواز شريف سے رقم کی واپسی کا سلسلہ شروع ہوگیا، شیخوپورہ میں 88 کنال 4 مرلہ زمين ميونسپل کميٹي ميں نيلام کردی گئی، زرعی زمین مقامی تاجر چوہدری محمد بوٹا نے خریدی۔

نواز شريف کی زمين خريدنے والے تاجر چوہدری محمد بوٹا کا کہنا تھا کہ وہ بہت خوش ہيں، اس زمین کو مزيد اچھا بنائيں گے اور نواز شريف کو ياد رکھيں گے۔

ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر فیصل سلیم نے بتایا کہ نواز شریف کی زمین کی نیلامی میں 3 افراد نے حصہ ليا، سب سے زيادہ بولی ايک کروڑ ايک لاکھ روپے فی ايکڑ لکی، جسے منظور کرليا گيا، احتساب عدالت ميں تفصيلات جمع کرائيں گے، جس کے بعد مزيد کارروائی ہوگی۔

سماء سے گفتگو کرتے ہوئے محمد بوٹا کا نواز شریف کی زمین خریدنے سے متعلق ایک سوال کے جواب میں کہنا تھا کہ کسی بات کا ڈر نہیں، پيسے دے کر زمین خريد رہا ہوں، کسی سے چھين نہيں رہا۔

شیخوپورہ میں نیلام کی گئی نواز شریف کی زمین زرعی ہے، جہاں جامن، کینو، امرود اور لیموں کے باغات ہيں۔

نيلامی سے حاصل ہونے ولی تقريباً ساڑھے 11 کروڑ روپے کی رقم قومی خزانے ميں جمع کرائی جائے گی، نواز شریف کی جائیداد کی نیلامی کا حکم احتساب عدالت اسلام آباد نے ديا تھا۔

متعلقہ خبریں