وزیرخارجہ دو روزہ دورے پر چین روانہ

Shah Mahmood Qureshi

فوٹو: ریڈیو پاکستان

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی دو روزہ دورے کے لیے آج اسلام آباد سے چین روانہ ہوگئے۔ وزیر خارجہ کے ساتھ اعلیٰ حکام بھی ساتھ ہوں گے۔

ریڈیو پاکستان کے مطابق شاہ محمود قریشی دورے کے دوران اہم شخصیات سے ملاقات کریں گے جبکہ اس دوران سی پیک منصوبوں پر بھی تبادلہ خیال کیا جائے گا۔

اسکے علاوہ دفاع و سلامتی تعاون، کوویڈ 19 ویکسین، انسداد دہشت گردی، باہمی علاقائی اور بین الاقوامی امور پر تبادلہ خیال کریں گے۔

دورہ پاک چین ’’آل ویدر اسٹریٹجک کوآپریٹو پارٹنرشپ‘‘ کو مزید مستحکم کرنے میں اہم کردار ادا کرے گا اور متعدد امور پر چین کے ساتھ اسٹریٹجک مواصلات اور ہم آہنگی کو وسعت دے گا۔

چین روانگی سے قبل ویڈیو پیغام میں وزیر خارجہ نے کہا کہ ملاقات میں دو طرفہ اسٹریٹجک ایجنڈا زیربحث آئے گا۔ پاکستان اور چین کے درمیان تعلقات کا ازسر نو جائزہ لینا ہے، دورے کے دوران افغانستان اور علاقائی صورتحال پر ایک دوسرے کا مؤقف سنيں گے۔

چینی وزیر خارجہ وانگ ژی نے پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کو دورے کی دعوت دی تھی۔

واضح رہے کہ 21جولائی کو وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بتایا کہ وہ چین کے دورے پر جا رہے ہیں جہاں افغانستان اور سی پيک سے متعلق اہم گفتگو ہوگی۔

میڈیا سے گفتگو میں وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ داسو واقعے کی جڑ تک پہنچ چکے ہیں جلد سازشی عناصر کو بے نقاب کريں گے۔ ملک دشمن عناصر سی پيک کو سبوتاژ کرنا چاہتے ہيں۔

بدھ 14جولائی کی صبح اپرکوہستان میں بس کے اندر دھماکے سے 9 چینی شہریوں سمیت 13 افراد جاں بحق ہوگئے تھے جبکہ واقعے میں 28 چینی شہری زخمی بھی ہوئے۔