وزیرداخلہ شیخ رشید وزیراعظم کی ہدایت پر کراچی روانہ

وزیرداخلہ شیخ رشید سندھ میں امن و امان کی صورتحال کا جائزہ لینے کےلیے کراچی پہنچ گئے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شیخ رشید کا کہنا تھا کہ سندھ میں گورنر راج سے متعلق باتیں غلط ہیں سندھ میں کوئی گورنر راج نہیں لگ رہا۔

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ تمام قانون نافذ کرنے والے اداروں اور وزیراعلیٰ سندھ سے ملاقات کے بعد کل 4 بجے پریس کانفرنس میں تفصیلات سے قوم کو آگاہ کروں گا۔

وزیرداخلہ کا کہنا تھا کہ میں کسی مشن پر نہیں ہوں وزیراعظم کو حقائق پر مبنی رپورٹ پیش کروں گا فیصلہ عمران خان نے کرنا ہے۔

وزیرداخلہ کا کہنا تھا کہ ہمارے دور حکومت میں کسی قسم کے اسلحہ لائسنس جاری نہیں ہوئے انہوں نے کہا کہ شہر سے منشیات کا حاتمہ کیا جائے گا۔

وزیرداخلہ کا کہنا تھا کہ نادرا میں کرپشن کی ڈھیڑ ہیں شناختی کارڈ غیرذمہ داری سے جاری کئے گئے ملوث لوگوں کیخلاف سخت کارروائی کریں گے۔

اسلام آباد سے روانگی سے قبل شیخ رشید کا کہنا تھا کہ کراچی میں امن و امان کے قیام  کےلیے جارہاہوں دورے کا مقصد صرف امن ہے۔

وزیرداخلہ کا دورہ کراچی دو روز پر مشتمل ہے جس میں وہ رینجرز ہیڈ کوارٹر میں امن و امان کے حوالے سے ایک ہنگامی اجلاس کی صدارت کریں گے۔

شیخ رشید گورنر سندھ اور وزیراعلیٰ سندھ سے  ملاقاتیں کریں گے اور سندھ میں امن و امان کی صورتحال بہتر بنانے کےلیے فیصلے کئے جائیں گے۔

واضح رہے کہ شیخ رشید احمد وزیراعظم عمران خان کی ہدایت پر دورہ کررہے ہیں کل شام گورنر سندھ اور اسد عمر سے ملاقات کے بعد وزیراعظم نے شیخ رشید کو دورہ کراچی کی ہدایت کی تھی۔

گورنرسندھ عمران اسماعیل کا کہنا تھا کہ سندھ میں امن امان کی صورتحال خراب ہے اور جرائم پیشہ افراد کو کچھ سیاسی لوگوں کی سرپرستی حاصل ہے انہوں نے کہا کہ اگر ضرورت ہوئی تو شکارپور میں ڈاکوؤں کیخلاف رینجرز کا آپریشن بھی کیا جاسکتا ہے۔

متعلقہ خبریں