وفاق نے موٹر ویز اور ایئرپورٹس گروی رکھنے کی منظوری دیدی

فائل فوٹو

وفاقی کابیبہ کے منگل 22 جون کو ہونے والے اجلاس میں موٹر ویز اور ہوائی اڈے گروی رکھنے کے پلان کی منظوری دیدی گئی ہے۔

اجلاس وزیراعظم ہاؤس میں وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت ہوا۔ جس میں 17 نکاتی ایجنڈے پر غور کیا گیا۔ اجلاس سے خطاب میں حکام کی جانب سے وزیراعظم کو اشیائے خور و نوش کی قیمتوں پر بریفنگ بھی دی گئی۔

اس موقع پر وزیراعظم کا کہنا تھا کہ مہنگائی میں کمی ہماری اولین ترجیح ہے، کوششیں کر رہے ہیں کہ صورت حال بہتر ہو۔ غریب آدمی کو زیادہ سے زیادہ ریلیف دیا جائے۔

آج ہونے والے اجلاس میں اسلم خان کو پی آئی اے کا نیا چیئرمین تعینات کرنے کی منظوری جب کہ ممنوعہ اسلحہ کے لائسنس کے اجرا کا معاملہ مؤخر کیا گیا۔ کابینہ نے حکومتی اثاثوں کے عوض ڈومیسٹک اور انٹرنیشنل اجارہ سکوک بانڈ جاری کرنے اور لکسمبرگ کے ساتھ دوہری شہریت کے معاہدے کی منظوری بھی دی گئی۔

اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ وفاقی کابینہ نے ونڈ پاور منصوبے کے لیے منگوائی گئی کرینوں کی پوسٹ شپمنٹ انسپیکشن کا معاملہ، اسلام آباد کے زون 4 میں کثیرالمنزلہ عمارتوں کی تعمیر کی، فیڈرل گورنمنٹ امپلائز ہاوسنگ اتھارٹی کی جانب سے کارلٹن ہوٹل کراچی کی زمین کا استعمال، تجاوزات کے خلاف پبلک پراپرٹی بل 2021 ، سپریم کورٹ اسٹاف ہاوسنگ کالونی کی تعمیر کی منظوری دے دی ہے۔

ذرائع کے مطابق جن شاہراؤں کو گروی رکھنے کی منظوری دی گئی ہے ان میں اسلام آباد ایکسپریس وے، اسلام آباد پشاور موٹروے ، پنڈی بھٹیاں لاہور سیکشن شامل ہیں، جب کہ ہوائی اڈوں میں لاہور اور ملتان انٹرنیشنل ائیرپورٹ شامل ہیں۔

متعلقہ خبریں