ووٹ دینے کی سوچ اورترقیاتی کاموں میں فرق ہے،شیخ رشید

انتخابات ایک ہوا کا نام ہے

شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ سینیٹ انتخابات کےلیے اپوزیشن کے بیانات سرپرائز دینے اور کچھ ہوجانےوالے ہی ہوتےہیں لیکن کچھ ہونے والا نہیں ہے۔ انھوں نے کہا کہ معلوم نہیں کہ کن اراکین کوووٹ کےعوض پیسوں کی پیش کش ہوئی۔

بدھ کو سماءکے پروگرام نیا دن میں بات کرتےہوئے شیخ رشید احمد نے کہا کہ اپوزیشن نے سینیٹ انتخابات کو زندگی اور موت کا معاملہ بنا دیا ہے۔ سینیٹ انتخابات کےلیے کسی نے ووٹ نہیں مانگا لیکن عمران خان کے امیدوار کے ساتھ کھڑے ہیں۔ سیاست دان سنجیدہ لوگ ہیں، اپنے ضمیر اور حالات کو بہتر سمجھتے ہیں۔

ویڈیو لیک سے متعلق انھوں نے کہا کہ یہ علم نہیں کس کی کیا حکمت عملی تھی۔ انتخابات صرف ایک دو گھنٹے کا معرکہ ہوتا ہے اور پھر حالات معمول پر آجاتے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ نیتوں کا فیصلے اللہ جانتا ہے۔ حفیظ شیخ کی جیت کےلیے پر امید ہیں اور ان کی کامیابی یقینی ہوگی۔ عامر لیاقت کے بیان پر انھوں نے کہا کہ معلوم ہوا تھا کہ ان کے معاملات ٹھیک ہوگئے ہیں اور سلجھ گئے ہیں۔ پی ٹی آئی کے تمام ایم این اے اور ایم پی ایز اس مقام تک عمران خان کی کوششوں تک یہاں پہنچے ہیں۔ جو بھی ناراض ہیں ، وہ ٹھیک ہوجائیں گے۔

 انھوں نے یہ بھی کہا کہ کاموں سے کون ووٹ دیتا ہے،انتخابات ایک ہوا کا نام ہے، جس پارٹی کی ہوا بن جاتی ہے وہ نکل جاتا ہے اور جس کی بیٹھ جاتی ہے وہ بیٹھ جاتا ہے۔ ووٹ دینے کی سوچ اور ترقیاتی کاموں میں فرق ہے۔

متعلقہ خبریں