ٹرین حادثہ دائیں پٹری کاويلڈنگ جوائنٹ ٹوٹنے کےسبب ہوا،تحقیقاتی رپورٹ

Train track

فوٹو: اے ایف پی

ڈہرکی میں ٹرین حادثے کی ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ تیار کرکے وفاقی وزیر ریلوے اعظم سواتی کو بھوا دی گئی۔

ریلوے کی معائنہ کرنے والی ٹیم نے ابتدائی رپورٹ یں بتایا کہ حادثہ اَپ ٹریک کی دائیں پٹری کا ويلڈنگ جوائنٹ ٹوٹنے کی وجہ سے ملت ایکسپریس کی بوگیاں ڈاؤن ٹریک پر گریں۔

ڈاؤن ٹریک پر راولپنڈی سے کراچی جانے والی سرسید ایکسپریس ملت ایکسپریس کی کوچیز سے ٹکرا گئی۔ حادثے کے نتیجے میں سرسید ایکسپریس کا انجن اور 4کوچز پٹری سے گریں۔

رپورٹ کے مطابق اَپ ٹریک کی پٹری کا جوڑ ويلڈنگ سے جڑا ہوا تھا جوکہ ٹرین گزرنے کے باعث ٹوٹا۔

دوسری جانب ٹرین حادثے کے بعد ریسکیو آپریشن مکمل ہونے پر کراچی سے دیگر شہروں کو جانے والا اَپ ٹریک بحال کر دیا گیا ہے جبکہ ڈاؤن ڈاؤن ٹریک پر کام جاری ہے جسے جلد بحال ک دیا جائے گا۔

گھوٹکی ٹرین حادثہ: جاں بحق افراد کی تعداد 63ہوگئی

گزشتہ روز ٹرین حادثے کے بعد سے کراچی سے دیگر شہروں کو جانے والی تمام ٹرینیں مختلف اسٹیشنز پر روک دی گئی تھیں۔ اَپ ٹریک بحال ہونے کے بعد تمام ٹرینیں روانہ ہونا شروع ہوگئی ہیں۔

واضح رہے کہ پیر 7جون کی صبح 3بج کر 38 منٹ پر کراچی سے سرگودھا جانے والی ملت ایکسپریس کی 4بوگیاں پٹری سے اتر کر ڈاؤن ٹریک پر جا گریں جو راولپنڈی سے کراچی آنے والی سرسید ایکسپریس سے ٹکرا گئیں۔

حادثے کے نتیجے میں اب تک 60 سے زائد افراد جاں بحق اور 100 سے زائد زخمی ہیں جبکہ بعض کی حالت تشویشناک ہے۔ ڈی ایس ریلوے سکھر کے مطابق ٹرین حادثے میں 14 بوگیاں متاثر ہوئیں جبکہ 3 مکمل طور پر تباہ ہوئیں۔

گھوٹکی ٹرین حادثے میں کی معلومات حاصل کرنے کےلیے ریلوے حکام نے نمبرز جاری کیے گئے ہیں جہاں سے معلومات حاصل کی جاسکتی ہیں۔

فیصل آباد سے 0419200488اور 03334805996، راولپنڈی سے 0519270834، روہڑی اور سکھر سے 0715813433، 0719310087 جبکہ کراچی سے 03003754200 ان نمبرز پر رابطہ کیا جاسکتا ہے۔

متعلقہ خبریں