ٹوئٹر کا تین اگست سے فلیٹس فیچر ختم کرنے کا اعلان

بدھ 14 جولائی 2021 21:08

فلیٹس فیچر کے ذریعے صارفین تصویر کو پیغام پہنچانے کے لیے استعمال کر سکتے تھے (فوٹو: پکسابے)

مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹوئٹر نے اعلان کیا ہے کہ ’فلیٹس کا فیچر تین اگست سے ختم کیا جا رہا ہے۔‘
ٹوئٹر ایپ میں ٹائم لائن کے اوپری حصے میں دیے گئے فیچر کے تحت صارفین مختلف تصاویر یا پھر تصاویر پر کیپشن کے ذریعے اپنا پیغام دوسروں سے شیئر کر سکتے تھے۔
مزید پڑھیں
فلیٹس کا فیچر آئی او ایس اور اینڈرائیڈ صارفین دونوں ہی استعمال کر سکتے تھے۔
بدھ کے روز کیے گئے اعلان میں ٹوئٹر نے یہ نہیں بتایا کہ فلیٹس کا فیچر کیوں ختم کیا جا رہا ہے تاہم ٹویٹ میں یہ وضاحت کی گئی ہے کہ ’کچھ نئے پر کام کر رہے ہیں۔‘

مختصر سی ٹویٹ کے اختتام پر مائیکروبلاگنگ پلیٹ فارم کا کہنا تھا کہ ’ہم معذرت خواہ یا آپ کو خوش آمدید۔‘

ٹوئٹر فلیٹس کیا ہے؟

ٹوئٹر کے فلیٹس فیچر کے تحت صارفین کو یہ سہولت حاصل تھی کہ ان کی ٹویٹ چوبیس گھنٹے کے بعد پروفائل سے غائب ہو جاتی تھی۔
سنیپ چیٹ اور فیس بک طرز کا یہ فیچر لانچ کیے جانے کے بعد صارفین کی جانب سے ملا جلا ردعمل سامنے آیا تھا۔
اسی دوران جون 2021 میں ٹوئٹر کی جانب سے یہ اعلان بھی سامنے آیا تھا کہ ’آمدن میں اضافے کے لیے فلیٹس پر اشتہار چلائے جائیں گے۔‘
رواں برس مارچ میں فیچر کا اعلان کرتے وقت ٹوئٹر کے پروڈکٹ لیڈر کیوان بیکپور کا کہنا تھا کہ فلیٹنگ ٹویٹس صارف کی ٹائم لائن پر نہیں شائع ہوں گی اور نہ ہی ان پر دیگر صارفین تبصرہ یا ’لائیک‘ کر سکیں گے۔ بلکہ صرف ڈائریکٹ میسج کے ذریعے عارضی ٹویٹ پر تبصرہ کیا جا سکے گا۔
کیوان کے مطابق فلیٹنگ ٹویٹس سے لوگوں کو اپنے عارضی خیالات شیئر کرنے میں مدد ملے گی جو شاید وہ باقاعدہ ٹویٹ کر کے صارفین کے ساتھ نہ شیئر کرنا چاہتے ہوں۔