پارٹی فنڈنگ کیس: آئندہ سماعت پراسکروٹنی کمیٹی سے رپورٹ طلب

ECP

فائل فوٹو

الیکشن کمیشن نے پارٹی فنڈنگ کیس میں آئندہ سماعت پر اسکروٹنی کمیٹی سے رپورٹ طلب کرلی۔

منگل 13جولائی کو الیکشن کمیشن میں سیاسی جماعتوں کی ممنوعہ غیر ملکی فنڈنگ کی تحقیقات میں ن لیگ اور پیپلزپارٹی کی دستاویزات تک رسائی کے لیے پی ٹی آئی کی درخواست پر سماعت ہوئی۔

الیکشن کمیشن ممبر پنجاب الطاف ابراہیم قریشی کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے سماعت کی۔ درخواست گزار وزیر مملکت اطلاعات فرخ حبیب الیکشن کمیشن میں پیش ہوئے۔

دوران سماعت ممبر ارشاد قیصر نے استفسار کیا کہ ابھی تک ن لیگ اور پیپلز پارٹی کی اسکروٹنی میں کیا پیش رفت ہوئی؟ جس پر وزیر مملکت فرخ حبیب نے جواب دیا کہ ابھی تک کوئی پیشرفت نہیں ہوئی اور گزشتہ تین ماہ سے اسکروٹنی کمیٹی کا کوئی اجلاس تک نہیں بلایا گیا۔

وکیل درخواست گزار نے کہا کہ اکبر ایس بابر کو ریکارڈ تک رسائی کی جو سہولت دی گئی وہ ہمیں بھی دی جائے کیونکہ مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی ریکارڈ کی جانچ پڑتال نہیں کروا رہے۔ وکیل نے استدعا کی کہ ہمیں بھی فارن فنڈنگ اسکروٹنی میں یکساں مواقع فراہم کیے جائیں۔

الیکشن کمیشن نے آئندہ سماعت پر رپورٹ طلب کرتے ہوئے رخواست پر سماعت 28 جولائی تک ملتوی کر دی۔

متعلقہ خبریں