پاکستان اور روس کے درمیان نارتھ ساؤتھ گیس پائپ لائن معاہدے پر دستخط

جمعہ 28 مئی 2021 17:24

گذشتہ برس نومبر میں دونوں حکومتوں نے انٹر گورنمنٹل معاہدے میں ترامیم پر اتفاق کیا تھا (فوٹو وزارت توانائی)

پاکستان کی وزات توانائی نے کہا ہے کہ پاکستان اور روس کے درمیان نارتھ ساؤتھ گیس پائپ لائن کے معاہدے پر دستخط ہوگئے ہیں جس کا نام پاکستان سٹریم گیس پائپ لائن رکھا گیا ہے۔
جمعے کو وزارت توانائی کی جانب سے جاری پریس ریلیز کے مطابق پاکستان کے روس میں سفیر شفقت علی خان اور روس کے وزیر توانائی نکولائی شلگینوف نے انٹر گورنمنٹل اگریمنٹ پر ماسکو میں دستخط کیے۔
وزارت توانائی کے مطابق پاکستان اور روس کے درمیان مفاہمت کے بعد انٹر گورنمنٹل اگریمنٹ  کو مزید موثر بنایا گیا ہے۔
مزید پڑھیں
معاہدے کے تحت روس کے اشتراک سے گیس پائپ لائن پراجیکٹ کو مکمل کیا جائے گا۔
پریس ریلیز کے مطابق منصوبے کی تکمیل کے لیے مخصوص پاکستان سٹریم گیس پائپ لائن کا ادارہ 60 دن کے اندر اندر قائم کیا جائے گا۔
منصوبے کا نام بھی پاکستان سٹریم گیس پائپ لائن رکھا گیا ہے۔
خیال رہے روس کے ساتھ  2015 میں معاہدہ ہونے کے باوجود اس پر عمل درآمد نہیں ہو سکا تھا۔
انگریزی روزنامہ دی نیوز کے مطابق پاکستانی حکام کی طرف سے اس معاہدے کی لاگت کا اندازہ 2.25 ارب ڈالر لگایا گیا ہے۔
2015 میں ہونے والے اس معاہدے کے مطابق روس نے اپنے خرچے پر گیس پائپ لائن تعمیر کرنی تھی اور 25 برس کے بعد پاکستان کے حوالے کرنا تھی۔ پہلے طے شدہ ماڈل کے تحت روس نے اس پراجیکٹ پر 85 فیصد رقم خرچ کرنا تھی جبکہ پاکستان نے 15 فیصد خرچ کرنا تھا۔
گذشتہ برس نومبر میں دونوں حکومتوں نے انٹر گورنمنٹل معاہدے میں ترامیم پر اتفاق کیا تھا جس پر آج دستخط ہوئے ہیں۔