پاکستان سے طبی عملے کا چھٹا گروپ کویت پہنچ گیا

پاکستان سے طبی عملے کو لے کر چھٹی پرواز کویت پہنچ گئی ہے جس میں مزید 196 ڈاکٹرز، نرسز اور تکنیکی ماہرین شامل ہیں۔ گذشتہ آٹھ ماہ سے کویت جانے والے میڈیکل پروفیشنلز کی کُل تعداد 11 سو سے تجاوز کر گئی ہے۔ 
وزارت سمندر پار پاکستانیز کے مطابق اکتوبر 2020 سے اب تک پاکستان سے ایک سو ڈاکٹرز، 903 سٹاف نرسز اور 131 ٹیکنیشنز کویت پہنچ چکے ہیں۔ 
11 سال کے طویل وقفے کے بعد اکتوبر 2020 میں 208 میڈیکل پروفیشنلز پر مشتمل دستہ کویت روانہ ہوا تھا۔ جس کے بعد دسمبر 2020 جبکہ رواں برس مارچ، اپریل اور اب جون میں دو، دو دستے روانہ ہوئے ہیں۔ 
مزید پڑھیں
وزارت سمندر پار پاکستانیز کے ذیلی ادارے اوورسیز ایمپلائمنٹ کارپوریشن کے مطابق ’پاکستان اور کویت کے درمیان طبی شعبے میں افرادی قوت بھجوانے کے ایم او یو کے بعد ہر مہینے مانگ بڑھ رہی ہے۔ او ای سی ڈاکٹرز اور دیگر سٹاف کے لیے اشتہار جاری کرتی ہے جس کے بعد آن لائن انٹرویو اور ٹیسٹ کے بعد سلیکشن کرکے افراد کو بھجوایا جا رہا ہے۔‘ 
او ای سی کے مطابق ’اس وقت بھی جب چھٹا بیچ روانہ ہوا ہے، مختلف شعبوں کے لیے طبی عملے کی بھرتیوں کا عمل جاری ہے اور جلد ہی ساتواں بیچ بھی روانہ کر دیا جائے گا۔‘ 
اس حوالے سے کویت میں پاکستانی سفیر سید سجاد حیدر نے کہا کہ ’گذشتہ ایک سال کے دوران پاکستان اور کویت کے تعلقات میں بہت بہتری آئی ہے، جس کے باعث نہ صرف ڈاکٹرز اور طبی عملے کی آمد کا سلسلہ شروع ہوا ہے بلکہ بزنس اور فیملی ویزہ کی بحالی بھی ہوئی ہے۔ اب کویت میں موجود ڈاکٹرز کے اہل خانہ بھی آنا شروع ہو گئے ہیں۔‘ 

اکتوبر 2020 سے پاکستانی ڈاکٹرز، نرسز او ٹیکنیشنز کے کویت جانے کا سلسلہ جاری ہے (فوٹو: اردو نیوز)
انھوں نے کہا کہ ’کورونا وبا کے دوران جس طرح پاکستانی ڈاکٹرز نے کویت میں خدمات سرانجام دی ہیں اس سے مقامی حکام نہ صرف خوش ہیں بلکہ پاکستانی طبی عملے کو سراہتے بھی ہیں۔‘ 
سید سجاد حیدر نے کہا کہ ’پاکستان اور کویت کے درمیان تاریخی، سیاسی، سفارتی اور ثقافتی تعلقات ہیں۔ حالیہ پیش رفتوں سے دونوں ممالک ان تعلقات کو مزید مستحکم کر رہے ہیں۔‘ 
پاکستانی سفیر نے بتایا کہ نہ صرف افرادی قوت بلکہ دفاع اور تجارت کے شعبے میں بھی باہمی تجارت کو فروغ دینے کے حوالے سے دونوں ممالک سرگرم ہیں۔ حال ہی میں سعودی کابینہ کے اہم ارکان سے ان کی ملاقاتیں بھی ہوئی ہیں۔ پاک بحریہ کے پی این ایس سیف نے جذبہ خیر سگالی کے تحت کویت کا دورہ کیا ہے۔ 
انھوں نے کہا کہ کویتی کمپنی اور پاکستان کے صوبہ سندھ کی حکومت کے درمیان 190 ملین ڈالر کے واٹر سپلائی منصوبے پر بھی دستخط ہوئے ہیں جو دونوں ممالک کے درمیان بڑھتے تعلقات کا مظہر ہے۔