پاکستان: پروازوں کو محدود کرنے کا فیصلہ، عید کے لیے نئی گائیڈ لائنز

ملک میں کورونا وائرس کے بڑھتے کیسز کے پیش نظر نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر (این سی او سی) نے دوسرے ممالک سے پاکستان آنے والی پروازوں کی تعداد کم  کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔
جمعرات کو این سی او سی کی جانب سے جاری ہونے والی پریس ریلیز میں بتایا گیا ہے کہ پروازوں کے حوالے سے 18 مئی کو دوبارہ غور ہو گا۔
مزید پڑھیں
پریس ریلیز کے مطابق پروازوں کو  پانچ مئی سے 20 مئی تک کم کیا جائے گا۔
جبکہ پروازوں کی بندش کے حوالے مزید تفصیلات سول ایوی ایشن کی جانب سے جاری کی جائیں گی۔
این سی او سی کا اجلاس وفاقی وزیر اسد عمر کی صدارت میں ہوا۔ این سی او سی کی پریس ریلیز میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ 40 سے 49 سال تک کے افراد کے لیے کورونا ویکسین دیے جانے کا سلسلہ تین مئی سے شروع ہو گا۔
اجلاس کے دوران آکسیجن کی پیداوار اور رسد کا بھی جائزہ لیا گیا۔
ملک میں صحت کی سہولیات بڑھانے کے لیے 6000 میٹرک ٹن آکسیجن اور 5000 سلنڈرز درآمد کرنے کا فیصلہ بھی کیا گیا۔

این سی او سی نے 5000 آکسیجن سلنڈرز درآمد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ (فوٹو: اے ایف پی)
اسی طرح 20 کرائیوجینک ٹینکس کی درآمد کی اجازت بھی دی گئی ہے۔
علاوہ ازیں مصری شاہ کی سکریپ انڈسٹری کی آکسیجن شعبہ صحت کو منتقل کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔
اجلاس کو بتایا گیا کہ بازاروں کی بندش (کچھ استثناؤں کے ساتھ) اور اندرون اور بیرون شہر ٹرانسپورٹ پر پابندی کے حوالے سے ہدایات متعقلہ وزارتوں کو بھجوا دی گئی ہیں۔

عید کے حوالے سے ہدایات

این سی او سی نے عید تعطیلات کے حوالے سے بھی ہدایات جاری کی ہیں۔ 
پریس ریلیز کے مطابق 10 سے 15 مئی تک عید کی چھٹیاں ہو گی۔ جس کا واضح مقصد ملک گیر نقل و حمل کو کم کرنا ہے۔
یک مئی کو یوم علی، شب قدر، اعتکاف، جمعتہ الوداع اور نماز عید کے حوالے سے تفصیلی ایس او پیز جاری کیے جائے گے۔
جبکہ چاند رات پر بازار جن میں مہندی، جیولری اور کپڑوں کے سٹال شامل ہیں، بند رہے گے۔ 
 8 سے 16 مئی تک تمام سیاحتی مقامات بند رہے گے۔ سیاحتی مقامات کے قریب موجود تمام ٹورسٹ ریزورٹس، پبلک پارکس اور ہوٹلز بھی بند رہیں گے۔
اس کے علاوہ سیاحتی مقامات کو جانے والے راستے بھی بند رہے گے۔ اس حوالے سے مری، گلیات، سوات، کالام، گلگت بلتستان اور سی ویو پر خصوصی توجہ مرکوز رہے گی۔
صرف گلگت بلتستان اور پاکستان کے زیر انتظام کشمیر کے مقامی افراد کو گھر واپس جانے کی اجازت ہو گی۔
عید کی تعطیلات کے دوران پبلک ٹرانسپورٹ مکمل طور پر بند رہے گی۔ جبکہ نجی گاڑیاں، ٹیکسیاں اور رکشے صرف 50 فیصد سواریوں کے ساتھ سڑکوں پر آ سکے گے۔
این سی او سی کی جانب سے شہریوں پر ایک بار پھر زور دیا گیا کہ وہ وائرس سے بچنے کے لیے گھروں پر رہیں اور عید کی چھٹیوں کے دوران بھی یہی طریقہ کار اختیار کریں۔

ملک میں کورونا کی بگڑتی صورتحال

خیال رہے کہ پاکستان میں کورونا وائرس کی صورتحال دن بدن گھمبیر ہو رہی ہے۔ 
گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کی وبا سے مزید 151 افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

گذشتہ 24 گھنٹوں میں پانچ ہزار 480 افراد کے کورونا ٹیسٹ مثبت آئے ہیں۔ (فوٹو: اے ایف پی)
نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹرل کے اعدادوشمار کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں میں 57 ہزار افراد کے کورونا ٹیسٹ ہوئے ہیں جس میں پانچ ہزار 480 افراد کے ٹیسٹ مثبت آئے ہیں۔
کورونا وائرس کی مثبت شرح نو اعشاریہ 61 فیصد رہی۔
پاکستان میں منگل سے 40 سال سے زائد عمر کے افراد کی ویکسینیشن کے لیے رجسٹریشن کا عمل شروع ہو چکا ہے۔
جبکہ چین سے پی آئی اے کی دو خصوصی پروازیں ویکسین لے کر جمعرات کی صبح پاکستان پہنچ گئی ہیں جبکہ تیسری پرواز 12 بجے پہنچے گی۔
مجموعی طور پر تینوں پروازوں کے ذریعے دس لاکھ ویکسین پاکستان لائی جائیں گی۔