پاکستان کیلئے 10سال بعد کویت کا ویزا بحال

Pak Kuwait visit

فوٹو: شیخ رشید/ٹویٹر

پاکستان اور کویت کے درمیان 10 سال بعد فیملی اور بزنس ویزا فوری بحال کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا۔

پاکستانی ملازمین کو معاہدے کے مطابق کویتی ویزا جاری کیا جائے گا جبکہ میڈیکل اور آئل فیلڈ میں ٹیکنیکل ویزا پر کوئی پابندی نہیں ہوگی۔

اسکے ساتھ خلیجی ممالک میں رہنے والے پاکستانی آن لائن ویزا لے کر کویت آ سکیں گے۔

واضح رہے کہ وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد ایک روزہ سرکاری دورے پر کویت میں موجود ہیں۔ کویت کے وزیراعظم شیخ صباح خالدالحامد الصباح سے وزیر داخلہ کی ملاقات ہوئی۔

ملاقات میں کویت کے وزیر داخلہ اور پاکستانی سفیر بھی موجود تھے جس میں پاکستان اور کویت دوطرفہ تعلقات سمیت باہمی دلچسپی کے امور پر گفتگو ہوئی۔

کویتی وزیر اعظم اور وزیر داخلہ شیخ رشید احمد ملاقات میں اہم فیصلے ہوئے جس میں 2011 سے بند پاکستانی شہریوں کے لیے کویتی ویزہ کی بحالی پر بڑی پیش رفت ہوئی۔

وزیر داخلہ نے کویتی وزیر اعظم کو وزیر اعظم عمران کا خصوصی مراسلہ بھی پیش کیا۔

اس موقع پر کویتی وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان اور کویت کے درمیان تعلقات سات دہائیوں پر محیط ہیں، دونوں کے عوام کے درمیان پیار اور اعتماد کا رشتہ ہے۔

وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا کہ پاکستان اور کویت کے درمیان تعلقات انتہائی دیرینہ ہیں جبکہ باہمی تعلقات کی بنیاد باہمی بھائی چارہ اور محبت ہے۔ تمام پاکستانی کویت کو اپنا دوسرا گھرسمجھتے ہیں۔

 شیخ رشید احمد نے کہا کہ پاکستانی خاندانوں اور کاروباری طبقے کو کویتی ویزا بندش سے بے پناہ مسائل درپیش تھے۔ پاکستانی لیبر کا کویت کی اولین ترقی میں بہت اہم کردار ہے اور ورکرز ویزا بحال ہونے سے پاکستانیوں کے لیے روزگار کے نئے مواقع پیدا ہوں گے۔

وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ کاروباری ویزا بحالی سے دونوں ملکوں کے درمیان تجارت بڑہے گی۔

متعلقہ خبریں