پنجاب: لازمی ویکسینیشن کیلئے موبائل سم کارڈکی بندش کی تجویز

YASMEEN-RASHID-ON-OXYGEN-BED-SOT-02-05

فوٹو: سماء ٹی وی

پنجاب حکومت نے لازمی ویکسی نیشن کے لیے موبائل سم کارڈ کی بندش سميت مختلف سزائیں دینے کی تجاویز پیش کی ہیں۔

گزشتہ روز وزیر صحت پنجاب یاسمین راشد کی زیرِ صدارت اجلاس میں مختلف تجاویز پیش کی گئيں۔

اجلاس میں ویکسی نیشن نہ کروانے والے افراد کا موبائل سم کارڈ بلاک کرنے کی تجویز سامنے آئی جبکہ ویکسی نیشن نہ کروانے والے افراد کا شاپنگ مالز، ریسٹورنٹس، پارکس اور سرکاری دفاتر میں داخلہ بند کرنے کی تجویز پر بھی غور کيا گيا۔

وزير صحت پنجاب ڈاکٹر ياسمين راشد کا کہنا تھا کہ کرونا وباء سے چھٹکارہ ویکسی نیشن کے ذریعے ہی ممکن ہے۔

صوبائی وزیر صحت کا کہنا تھا کہ آبادی کے لحاظ سے ہر ضلع کے لیے روزانہ ویکسی نیشن کا ہدف مقرر کر دیا گیا ہے۔ اہداف پورا نہ کرنے والے اضلاع کے افسران سے باز پرس ہوگی۔

واضح رہے کہ سرکاری اور نجی اداروں میں ملازمین کو حکام کی جانب سے کرونا ویکسین لگوانے کی ہدایت بھی کی گئی ہے۔

گزشتہ 24گھنٹوں کے دوران ملک میں کرونا وائرس سے مزید 76 افراد انتقال کرگئے جبکہ مجموعی اموات 21 ہزار 529 ہوگئيں۔ کرونا کيسز کی شرح دو روز بعد پھر 3فيصد سے اوپر چلی گئی، این سی او سی نے پابندیاں بھی نرم کر دیں۔