پيپلزپارٹی سندھ کےبجائےصرف اپنی جاگيريں بنارہی ہے،مصطفیٰ کمال

حکومت اپنے صوبےکےبچوں کوکتےکےکاٹنےسےنہيں بچا پارہی ہے

مصطفی کمال نے کہا ہے کہ سندھ میں 13 سال میں 10 ہزار روپے کی رقم ملنےکے بعد بھی یہ صوبہ انسانوں کے رہنے کی جگہ نہیں۔

کراچی میں ہفتے کو صحافیوں سے بات کرتےہوئے پاک سرزمين پارٹی کے سربراہ مصطفی کمال نے کہا ہے کہ پيپلزپارٹی سندھ کو نہيں صرف اپنی جاگيريں بنارہی ہے۔ سندھ حکومت کو 13 سال ميں 10 ہزار ارب روپے سے زائد رقم ملی اوراس کے بعد بھی سندھ انسانوں کے رہنے کی جگہ نہيں ہے۔

انھوں نے کہا کہ صوبے میں اتنی رقم خرچ ہونے کے بعد بھی سندھ انسانوں کے رہنے کی جگہ نہیں۔13سال میں ایک قطرہ اضافی پانی اورایک نئی بس کراچی کو نہیں ملی جبکہ دوسرے شہروں میں میٹرو بسیں، ٹرینیں چل رہی ہیں جبکہ کراچی والے چنگچی رکشوں اور ٹوٹی بسوں کی چھتوں پر آگئے ہیں۔

مصطفی کمال نے کہا کہ سندھ میں 10ہزار ارب روپے جس کو ملے وہ مراد علی شاہ ہیں۔ سندھ حکومت اپنے صوبےکےبچوں کوکتےکےکاٹنےسےنہيں بچا پارہی ہے۔ سندھ ميں 70لاکھ بچے اسکولوں سےباہرہيں اور بتاياگيا ہے کہ 23سوارب روپےتعليم پرخرچ کيےگئےہيں۔

ایم کیو ایم سے متعلق مصطفی کمال نے کہا کہ 40سال پہلےایم کیو ایم  کوٹہ سسٹم ختم کرانے کیلئے بنائی گئی تھی۔ آج ایم کیوایم والے کہتے ہیں کہ خدا کا واسطہ اس کوٹے پر تو نوکری دے دو۔

متعلقہ خبریں