پی ایس ایل کے بقیہ میچز کہاں ہونے جا رہے ہیں؟

پاکستان کرکٹ بورڈ اور چھ فرنچائز مالکان نے جمعے کو ایک ورچوئل اجلاس میں شرکت کی۔ اجلاس چیئرمین پی سی بی وسیم خان کی صدارت میں ہوا، جس میں شرکا نے لیگ کے انعقاد سے متعلق این سی او سی کی ہدایات کا تمام پہلوؤں سے جائزہ لیا۔
اجلاس میں لیگ کے بقیہ 20 میچز کے لیے پہلی ترجیح متحدہ عرب امارات کو ہی قرار دیا گیا۔ اجلاس میں بتایا گیا کہ چونکہ اب دونوں ممالک میں عید کی تعطیلات کا آغاز ہو چکا ہے اور پاکستان کرکٹ ٹیم کو 23 جون کو دورہ انگلینڈ کے لیے روانہ ہونا ہے، لہٰذا پی سی بی اب ایمریٹس کرکٹ بورڈ کے ساتھ رابطہ کر کے ایونٹ کو منعقد کرنے  پر تبادلہ خیال کرے گا۔
مزید پڑھیں
اجلاس میں ہونے والی کارروائی کے مطابق تعطیلات کے دوران پی سی بی ٹورنامنٹ کے نئے شیڈول کی تیاری پر بھی کام کرے گا۔ اس دوران پی سی بی پلیئنگ اور ٹریننگ سہولیات، ہوٹل کی بکنگ، گراؤنڈ پہنچنے کے لیے ٹرانسپورٹ اور ویزوں کے حوالے سے بھی ای سی بی سے مکمل رابطے میں رہے گا۔
اسی طرح پی سی بی اس دوران ممکنہ مالی اور دیگر خدشات کا جائزہ لینے کے بعد فرنچائزز سے مشاورت کے بعد مقام سے متعلق کوئی بھی حتمی فیصلہ کرے گا۔
علاوہ ایں اجلاس کے بعد پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین وسیم خان کا کہنا تھا کہ آج کا اجلاس بہت مفید رہا۔

چیئرمین پی سی بی کے مطابق ’ہم پی ایس ایل سکس کو کامیابی سے مکمل کرنے کے لیے پرعزم ہیں۔‘ (فوٹو: پی سی بی)
بقول ان کے ’ہم نے کئی پہلوؤں کا جائزہ لیا، اس دوران متحدہ عرب امارات کا وینیو پہلی ترجیح بن کر سامنے آیا ہے تاہم ہمیں اب بھی کئی چیلنجز کا سامنا ہے۔‘
ان کا کہنا تھا کہ ’ہم پی ایس ایل سکس کو کامیابی سے مکمل کرنے کے لیے پرعزم ہیں۔‘
خیال رہے کہ پاکستان سپر لیگ کے چھٹے سیزن کے دوران بائیو سکیور ببل ٹوٹنے اور کھلاڑیوں میں کورونا وائرس تشخیص ہونے کے بعد چار مارچ کو ایونٹ منسوخ کر دیا گیا تھا۔ 

کھلاڑیوں میں پے در پے کورونا کی تشخیص کے بعد چار مارچ کو پی ایس ایل ملتوی کر دیا گیا تھا۔ (فوٹو: پی سی بی)
ایونٹ کے بقیہ 20 میچز دو جون سے کراچی میں شیڈول کیے گئے ہیں جہاں تمام کھلاڑیوں کو ایونٹ کے آغاز سے قبل 7 روز کا قرنطینہ کرنا ہوگا۔ ایونٹ کا فائنل 20 جون کو نیشنل کرکٹ سٹیڈیم کراچی میں کھیلا جانا ہے۔ 
خیال رہے کہ دنیا کی سب سے بڑی کرکٹ لیگ انڈین پریمیر لیگ (آئی پی ایل) بھی کھلاڑیوں میں کورونا وائرس کی تشخیص کے بعد ملتوی کر دی گئی ہے۔
آئی پی ایل انڈیا میں بغیر تماشائیوں کے کھیلا جا رہا تھا جبکہ انڈین کرکٹ بورڈ نے گذشتہ سیزن متحدہ عرب امارات میں کروایا تھا۔