پی ڈی ایم اجلاس،پی پی اوراےاین پی کوواپس لانےيا باہررکھنےکا فيصلہ متوقع

اجلاس کی میزبانی پاکستان مسلم لیگ نون کررہی ہے

اسلام آباد میں اپوزیشن جماعتوں کے مرکزی اتحاد پی ڈی ایم کا سربراہ اجلاس جاری ہے جس میں پاکستان پیپلز پارٹی اور عوامی نیشنل پارٹی کو پی ڈی ایم ميں واپس لانے يا باہر رکھنے کا فيصلہ متوقع ہے۔

اسلام آباد میں مولانا فضل الرحمان کی زیرصدارت پی ڈی ايم سربراہ اجلاس ميں پاکستان مسلم لیگ کے صدرشہبازشريف کيساتھ مريم نواز بھی موجود ہیں۔اجلاس کی میزبانی پاکستان مسلم لیگ نون کررہی ہے۔ لندن سے نوازشریف اور اسحاق ڈار ویڈیولنک کے ذریعے شرکت کررہے ہیں۔ بی این پی مینگل کے سربراہ سردار اخترمینگل بھی ویڈیو لنک پرموجود ہیں۔

اجلاس میں ملکی سیاسی صورتحال اور پی ڈی ایم حکمت عملی پر مشاورت کی جارہی ہے۔اجلاس میں افغانستان ایشو سے متعلق پی ڈی ایم موقف واضح کرے گی۔

جمعہ کو شہبازشریف کے ساتھ ملاقات میں مولانا فضل الرحمان نے کہا تھا کہ اگر پی ڈی ایم میں  پيپلزپارٹی کو واپس آنا ہے تو سرنڈر کرنا ہوگا۔ پیپلزپارٹی سے متعلق شہباز شريف سے سوال ہوا تو انھوں نے کہا کہ اکيلی جماعت کسی کو واپس لانے کا يا نکالنے کا اختيار نہيں رکھتی،تمام فيصلے مل جل کر اور اتفاق رائے سے کيے جائيں گے۔ شہباز شريف نے یہ بھی وضاحت دی کہ پيپلزپارٹی کو عشائيے ميں بطور اپوزيشن ليڈر بلايا تھا اور اس کا پی ڈی ايم سے تعلق نہيں تھا۔

متعلقہ خبریں