پی ڈی ایم میں پیپلزپارٹی کا بیانیہ درست تھا، پرویزاشرف

پی ڈی ایم کی تشکیل پیپلزپارٹی کی وجہ سے ہوئی

سابق وزیراعظم اور پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنما راجہ پرویز اشرف نے کہا ہے کہ پی ڈی ایم میں پیپلزپارٹی کا بیانیہ درست تھا۔

جمعرات کو اسلام آباد میں احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے بات کرتے ہوئے سابق وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے کہا کہ پی ڈی ایم کو دیگر معاملات کیساتھ نہیں جوڑا جائے، ہم غیر جمہوری اقدام کے خلاف ہیں۔ ماضی میں بھی بے نظیربھٹو کو قومی اسمبلی سے مستعفی ہونے کا کہا گیا تھا لیکن انھوں نے مستعفی ہونے سے انکار کردیا تھا اور کہا تھا کہ جمہوری کردار ادا کریں گے۔

پی ڈی ایم سے متعلق ان کا مزید کہنا تھا کہ پی ڈی ایم کی تشکیل پیپلزپارٹی کی وجہ سے ہوئی۔ ہم عوامی لوگ ہیں اور عوامی طاقت سے آتے ہیں۔ پیپلزپارٹی کے بیانیے سے متعلق انھوں نے کہا کہ ہمارا مطالبہ تھا کہ پارلیمان کی فورم کو استعمال کریں لیکن اُس وقت پی ڈی ایم کے کچھ لوگ مشترکہ استعفیٰ دینے کیلئے بضد تھے لیکن آج وہی لوگ بجٹ پر حکمت عملی بنانے کی دعوت دے رہے ہیں۔ پیپلزپارٹی رہنما نے کہا کہ پی ڈی ایم سے معذرت پی پی پی کو نہیں بلکہ دوسروں کو کرنی چاہئیے اور پیپلزپارٹی نے کسی کو واپس آنے کیلئے درخواست نہیں دی ہے۔

یوسف رضا گیلانی سے متعلق ان کا کہنا تھا کہ وہ ووٹ لے کر سینیٹ میں اپوزیشن لیڈر بنے ہیں اور ان کا جرم کیا ہے۔ سینیٹ میں اپوزیشن لیڈر یوسف رضا گیلانی ہی رہیں گے اور یہ اس ہی طرح ہے کہ جیسے قومی اسمبلی میں ووٹ لے کر شہباز شریف اپوزیشن لیڈر ہیں۔

سابق وزیراعظم نے مزید کہا کہ احتساب سب کیلئے برابر ہونا چاہئے اور پیپلزپارٹی عدالتوں کا احترام کرتی ہے۔امید ہے کہ عدالتوں سے انصاف ضرور ملے گا اور انصاف تمام افراد کے لیے برابر ہونا چاہیے ۔ اس وقت ملک میں زیادہ توانائیاں ایک دوسرے کو نیچے دکھانے میں لگائی جا رہی ہیں۔ پرویز اشرف نے بتایا کہ اپنے اوپر عائد زیادہ تر کیسز میں بری ہوچکے ہیں۔

متعلقہ خبریں