چوہدری نثارحلف اٹھا نہ سکے، ’عمران خان سب کو ساتھ لے کر چلیں‘

پیر 24 مئی 2021 14:31

چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ ’میں کسی سیاسی کھیل کا حصہ نہیں ہوں۔‘ (فائل فوٹو اے ایف پی)

چوہدری نثار نے پاکستان کے وزیراعظم عمران خان کو مشورہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ ’ٹھنڈا کرکے کھائیں اور سب کو ساتھ لے کر چلیں۔‘
پیر کو لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ’میں کسی سیاسی کھیل کا حصہ نہیں ہوں۔‘
حلف نہ اٹھانے پر ان کا کہنا تھا کہ ہر چیز طے تھی، لیکن انہیں کہا گیا کہ سپیکر اور ڈپٹی سپیکر کی غیر موجودگی میں حلف نہیں اٹھایا جا سکتا۔
مزید پڑھیں
چوہدری نثار نے کہا کہ ’تین ماہ پہلے الیکشن کمیشن اور اسمبلی کو حلف کے لیے لکھ کر بھیجا۔ سپیکر اور ڈپٹی سپیکر کے بغیر حلف نہ لینے کی بات غلط ہے۔ اب کیا کرنا ہے یہ واپس جا کر فیصلہ کریں گے۔ کل یا پرسوں عدالت میں جائیں گے۔‘
وزیراعظم عمران خان سے دوستی کے حوالے سے پوچھے گئے سوال پر ان کا کہنا تھا کہ ’عمران خان کے اور بھی بہت دوست ہیں جو ان کو مشورے دیتے رہتے ہیں، لیکن میں عمران خان کو کہتا ہوں کہ ٹھنڈا کر کے کھائیں۔ حکمران کو سب کو ساتھ لے کر چلنا ہوتا ہے۔‘
ان کا کہنا تھا کہ ’ملک میں انتشار کی کوئی جگہ نہیں اس وقت افہام و تفہیم کی ضرورت ہے۔ ملک کو مفاہمت کی ضرورت ہے۔‘
چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ ‘حلف لینے کا فیصلہ اس لیے کیا کیونکہ ایک سیاسی پیش رفت ہوئی۔ حکومت ایک خود ساختہ آرڈینیس لانے کی کوشش میں ہے جس میں یہ چاہتے ہیں کہ ممبرز کی ڈس کوالیفکیشن ہو۔ میرٹ پر ہو تو ٹھیک مگر رات کے اندھیرے میں ایسا آرڈینیس آئے تو اعتراض ہے۔‘
ان سے پوچھا گیا کہ آپ کا قائد کون ہے؟ نواز شریف، شہباز شریف یا مریم نواز جس پر ان کا کہنا تھا کہ ’آپ کیوں میرا قائد بنانے پر بضد ہیں۔ اس پر کوئی تبصرہ نہیں کروں گا۔‘