کراچی:کرکٹ کھیلنے سے روکنے پرلڑکوں کاتشدد، ایک شخص جاں بحق

کراچی کے علاقے نارتھ کراچی میں بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب لڑکوں کے ایک گروہ نے کرکٹ کھیلنے سے روکنے پر تشدد کرکے ایک شخص کو قتل کردیا۔

ایس ایچ او بلال کالونی پولیس اسٹیشن نے سماء ڈیجیٹل سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ کچھ لڑکوں، زیادہ تر اسی علاقے کے رہائشی نارتھ کراچی سیکٹر 5 ڈی میں عید گاہ گراؤنڈ کے بار کرکٹ کھیل رہے تھے جب مقتول نے جاری میچ روکنے کی کوشش کی۔

ایس ایچ او کا کہنا ہے کہ مقتول کی شناخت 31 سالہ ریحان الحق ولد امام الحق کے نام سے ہوئی ہے، اپنے گھر سے باہر آیا اور کرکٹ کھیلنے والے لڑکوں سے میچ روکنے کا کہا تاہم لڑکوں نے انکار کیا اور سخت جملوں کے تبادلے کے بعد مقتول پر حملہ کردیا۔

پولیس افسر نے مزید بتایا کہ نوجوانوں نے کرکٹ بیٹ اور وکٹس سے ریحان پر تشدد کیا جس کے بعد وہ بیہوش ہوگیا، مقتول کو عباسی شہید اسپتال منتقل کیا گیا تاہم وہاں پہنچنے پر ڈاکٹروں نے اس کے انتقال کی تصدیق کردی۔

ایس ایچ او بلال کالونی پولیس اسٹیشن کا کہنا ہے کہ ایک ٹیم نے جائے وقوعہ پہنچ کر ایک مشتبہ شخص کو حراست میں لے لیا، تاہم پولیس افسر نے یہ بھی کہا کہ مقتول کے اہل خانہ میں سے کسی نے بھی پولیس اسٹیشن آکر ایف آئی آر درج نہیں کرائی۔

مقتول کے بھائی فرحان نے سماء ڈیجیٹل سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ حملہ کرنیوالے زیادہ تر لڑکے ان کے پڑوسی ہیں، میرے بھائی پر 8 لڑکوں نے حملہ کیا جنہیں شناخت کرسکتا ہوں۔

ان کا مزید کہنا ہے کہ میرے بھائی نے کئی بار ان لڑکوں کو رات میں کرکٹ کھیلنے سے منع کیا تھا کیوں کہ شور شرابے کے باعث رہائشیوں کو پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا تھا۔

متعلقہ خبریں