کراچی:کرینوں سےقربانی کے جانوراُتارنا اذیت ناک عمل ہوتا ہے

تماش بینوں کا شور ہوتا ہے

Your browser does not support the video tag.

کراچی ميں قربانی کے جانوروں کو چھتوں سے کرينوں کے ذريعے اتارنے کا عمل اذیت ناک ہوتاہے۔ان مناظر کو دیکھنے کے لیے لوگ دور دور سے ان گلیوں اور محلوں کا رخ کرتےہیں۔

کراچی کے کچھ علاقوں میں چھت پر پلنےوالے بیلوں کو کرین کی مدد سے قربانی سے چند روز پہلے زمین پر اتارا جاتا ہے۔ اس دوران تماش بینوں کا شور ہوتا ہے اور لوگ یہ مناظر کیمرے کی آنکھ میں قید کرلیتے ہیں۔ نمود و نمائش کے لیے اس  بے رحم تماشے کے خوف سے  بیل  میں کھڑے ہونے کی سکت بھی ختم ہوجاتی ہے۔

کرین ہیلپر نےبتایا ہے کہ پچھلے سال  کرین سے بیل زمین پر گرنے کا واقعہ کرین آپریٹر کی غلطی کی وجہ سے پیش آیا تھا۔ علمائے کرام کا کہنا ہے کہ قربانی کودولت کے اظہار کا ذریعہ  بنانا ثواب کوریاکاری کے بھینٹ چڑھانے کے مترادف ہے۔

متعلقہ خبریں