کراچی: بارش کے دوران کرنٹ لگنے سے 12سالہ لڑکاجاں بحق

ملیر کے رہائشی حماد کو الیکٹرک پول سے کرنٹ لگا

Your browser does not support the video tag.

کراچي ميں بارش کے دوران ملير الفلاح سوسائٹی میں الیکٹرک پول سے کرنٹ لگنے کے باعث 12 سالہ حماد جاں بحق ہوگیا۔ کے اليکٹرک نے ذمہ داری کنڈے پر ڈالی تو مکينوں نے بھی سوال اٹھا دیا کہ کنڈے ہٹانا کس کی ذمہ داری ہے؟۔

کراچی میں پیر کی علی الصبح موسلا دھار بارش ہوئی، جس کے بعد بیشتر علاقوں میں جگہ جگہ پانی جمع ہوگیا۔

ملیر الفلاح سوسائٹی میں کھمبے میں کرنٹ آنے سے 12 سال کا حماد جاں بحق ہوگیا۔

واقعے کے عینی شاہد اور متوفی کے بھائی نے بتایا کہ وہ اپنے بھائی اور ایک کزن کے ساتھ دوسرے کزن کو اسکول سے لینے گئے تھے، واپسی پر بھائی پانی میں گرگیا اور اس کا ہاتھ بجلی کے کھمبے پر لگ گیا۔

رپورٹ کے مطابق حماد ساتویں جماعت کا طالب علم اور 4 بہن بھائیوں میں تیسرے نمبر پر تھا۔

کے الیکٹرک کا کہنا ہے کہ پول پر کنڈا لگا ہوا ہے، جس کی وجہ سے کرنٹ آیا۔ اہل محلہ کہتے ہیں کنڈوں کو دیکھنا کسی اور کی نہیں کے الیکٹرک کی ذمہ داری ہے۔

حماد کے چچا کہتے ہیں کہ کے الیکٹرک واقعے کی ذمہ دار ہے، قانونی کارروائی کریں گے۔

متعلقہ خبریں