کراچی: سرخ پھولوں سے لدے سحر انگیز درخت

مائی کلاچی روڈ پرلگے ان درختوں کی شان نرالی ہے

کراچی میں درختوں کی کمی کی وجہ سے بہار کے رنگ شاد ونادر ہی دیکھنے کو ملتے ہیں تاہم یہاں کچھ ایسے درخت بھی ہیں جن پر سرخ پھولوں کا بسیرا ہے اور ان سے اطراف کی فضا معطر رہتی۔

تیس سے 35 سال پرانے سرخ پھولوں سے ڈھکے یہ درخت مائی کلاچی روڈ پربحریہ کمپلیکس کےساتھ ایک گلی ميں شان سےکھڑے ہيں۔

ماہرباغبانی ضیا مجاہد کا کہنا ہے کہ يہ درخت شمالی کوريا، چین اور تھائی لينڈ ميں پاياجاتاہے۔ ان کا مزید کہنا ہے کہ چائينز ايمپريل نے سب سے پہلے ہزاروں سال قبل اس درخت کو لگايا تھا اور اسے مختلف زبانوں ميں مختلف ناموں سے پکاراجاتاہے۔

انہوں نے کہا کہ اس پرکشش درخت پرنظر پڑتی ہے تو پھرٹھہر سی جاتی ہے اور انسان خود کو فطرت کےقریب محسوس کرتا ہے۔

ایک شہری اویس حیدر کا کہنا تھا کہ ان درختوں کو ديکھ کر دل باغ باغ ہوجاتا ہے اور دل چاہتا ہے کہ اسے دیکھتے ہی رہا جائے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ وہ جب بھی وہاں سے يہاں گزرتے ہیں تو لازمی طور پر گاڑی سے اترکر اسے دیکھتے اور تصاویر بناتے ہیں۔

موسم بہار میں ان درختوں پرپتےآنا بند ہوجاتے ہیں۔ رو زکونپلیں پھوٹتی ہیں اور پھول کھلتے اورزمین پر گرتے ہیں جس سے اطراف کا منظر ہی بدل جاتا ہے۔

متعلقہ خبریں