کراچی میں ڈیری ایسوسی ایشنزکی ملی بھگت، پرائس فکسنگ کاانکشاف

کراچی میں ڈیری سیکٹر میں گٹھ جوڑ اور پرائس فکسنگ کا انکشاف، دودھ کی قیمتوں میں 26 روپے فی لیٹر اضافہ کرکے صارفین کو یومیہ 13 کروڑ روپے نقصان پہنچایا گیا۔

مسابقتی کمیشن نے کراچی میں ڈیری فارمر ایسوسی ایشنز کی مبینہ ملی بھگت کا سراغ لگالیا، مسابقتی قوانین کے منافی سرگرمیوں کے حوالے سے تحقیقات مکمل کرلی گئیں۔

مسابقی کمیشن کی جانب سے جاری اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ کراچی میں ڈیری سیکٹر میں گٹھ جوڑ اور پرائس فکسنگ کا انکشاف ہوا ہے، شہر قائد کی تین بڑی ڈیری ایسوسی ایشن اس گٹھ جوڑ اور پرائس فکسنگ میں ملوث ہیں۔

اعلامیے کے مطابق دودھ کی قیمتوں میں 26 روپے فی لیٹر اضافہ کیا گیا، صارفین کو یومیہ 13 کروڑ اور سالانہ 47 ارب روپے کا نقصان پہنچایا گیا، 94 روپے کے سرکاری ریٹ کے بجائے ملی بھگت سے دودھ 120 روپے فی لیٹر تک مہنگا بیچا گیا۔

مسابقی کمیشن کے مطابق کراچی کی ڈیری ایسوسی ایشن کے مبینہ گٹھ جوڑ سے دودھ کی قیمتوں میں اضافے کے شواہد مل گئے، صدر ڈیری ایسوسی ایشن کراچی نے دودھ کی قیمتوں میں اضافے کا اعلان کیا تھا۔

کراچی میں اس وقت دودھ 130 روپے فی لیٹر فروخت ہورہا ہے۔

متعلقہ خبریں