کراچی: پویلین اینڈ کلب کو 2روز میں گرانے کا حکم

pavilion end club still 14-06

فائل فوٹو

سپریم کورٹ نے کراچی میں الہ دین پارک سے متصل پویلین اینڈ کلب اور پارک کے شاپنگ سینٹر کو 2 روز میں گرانے کا حکم دے دیا۔

پیر 14جون کو سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں تجاوزات سے متعلق کیسز کی سماعت ہوئی، جس میں چیف جسٹس گلزار احمد نے الہ دین پارک سے متصل پویلین اینڈ کلب کو غیر قانونی قرار دیا۔

عدالت نے ریمارکس دیے کہ غیر قانونی طور پر زمین کو کنورٹ کرکے کمرشل کردیا گیا، لہٰذا پولیس اور رینجرز کی مدد سے فوری کارروائی کی جائے۔

سپریم کورٹ نے راشد منہاس روڈ پر یو بی ایل کمپلیکس سے متصل زمین بھی خالی کرانے کا حکم دیا۔

سپریم کورٹ کراچی رجسٹری کاشہرکےنالوں پرتجاوزات آپریشن جاری رکھنےکا حکم

سپريم کورٹ کراچی رجسٹری نے کشمیر روڈ سے تمام تجاوزات کو ختم کرنے کا بھی حکم دے ديا جبکہ کے ڈی اے کلب، اسکواش کورٹ، سوئمنگ پول و دیگر تعمیرات بھی گرانے کا حکم دیا۔

کشمیر روڑ پر کے ڈی اے افسر و دیگر تعمیرات سے متعلق کيس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے کے ڈی اے کو حکم دیا کہ جتنی مشینیں چاہیں لے کر جائیں اور سب گرائیں۔

عدالت نے کشمیر روڑ پر تمام کھیل کے میدان بحال کرنے کا حکم بھی دے دیا۔

اس سے قبل سپریم کورٹ نے متاثرین کی درخواست مسترد کرتے ہوئے نالوں پر تجاوزات آپریشن جاری رکھنے کا حکم دیا۔ ریمارکس دیے کہ غیرقانونی لیز کی بنیاد پر آپریشن نہیں روک سکتے۔

متعلقہ خبریں