کروناکیسز میں اضافہ: سندھ کا پیرسے دوبارہ سختیاں کرنےکا فیصلہ

Gul-Plaza

فوٹو: آن لائن

سندھ حکومت نے کرونا کیسز میں اضافے کے سبب پیر سے دوبارہ سختیاں کرنے کا فیصلہ کر لیا جس کے تحت پیر 26جولائی سے شاپنگ مالز اور مارکیٹ صبح6 سے شام 6بجے تک کھلیں گی۔

وزیراعلیٰ مراد علی شاہ کی زیر صدارت سندھ ٹاسک فورس کا اجلاس ہوا۔

اجلاس میں شادی ہالز اور دیگر تقریبات پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ ہوا جبکہ کریانہ اسٹور، بیکریاں اور فارمیسی کھلی رہیں گی۔ سندھ بھر ميں درگاہیں بھی بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا جبکہ پیر سے تعلیمی ادارے بھی بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

ریسٹورنٹ ميں بھی انڈور اور آؤٹ ڈور کھانے پر پابندی ہوگی جبکہ ریسٹورنٹ ميں صرف ٹیک اوے کی اجازت ہوگی۔ سرکاری اور نجی سیکٹر میں 50 فیصد اسٹاف حاضر ہوگا۔

صوبے میں امتحانات اپنے شیڈول کے مطابق ہی ہوں گے جبکہ جمعہ اور اتوار کاروبار بند رہے گا۔

اس سے قبل سندھ حکومت نے صوبے میں ویکسین نہ کروانے والے افراد کی موبائل سم بند کرنے کے لیے وفاق سے سفارش کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

سندھ حکومت نے صوبے میں ویکسین نہ کروانے والے افراد کی موبائل سم بند کرنے کے لیے وفاق سے سفارش کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ وزیراعلیٰ سندھ کے مطابق پی ٹی اے تمام لوگوں کو پیغام بھیجے کہ وہ ویکسین کروائیں اور ايک ہفتے کے دوران ويکسين نہ کرانے والوں کی سم بلاک کی جائے۔

وزیراعلیٰ نے یہ بھی کہا کہ ویکسین نہ کرانے والے سرکاری ملازمین کی تنخواہیں روکنے کا فیصلہ ہوگا جس کے لیے سیکریٹری فنانس کو اے جی سندھ سے رابطہ کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔