کوئی نیا اتحاد نہیں،پی ڈی ایم برقرار ہے، مریم نواز

مہنگائی اور معیشت کا پتہ غریب کے گھر سے پتہ چلتا ہے

مریم نواز نے کہا ہے کہ اپوزیشن کا کوئی نیا اتحاد نہیں ہے اور صرف پی ڈی ایم موجود ہے۔ پی ڈی ایم کے اگلے اجلاس  میں مستقبل کا لائحہ عمل طے کیا جائے گا۔

منگل کو اسلام آباد ہائی کورٹ کے باہر میڈیا سے بات کرتے ہوئے لیگی رہنما مریم نواز نے کہا کہ پی ڈی ایم نے رمضان کے بعد اجلاس منعقد کرنا تھا اور یہ جلد ہونا ہے۔ پی ڈی ایم کے سیکرٹری جنرل شاہد خاقان عباسی نے ن لیگ اورپی ڈی ایم کے مؤقف کوہی پیش کیا ہے تاہم پیپلزپارٹی کا اب تک جواب نہیں آیا ہے۔

صوبائی حکومت سے متعلق انھوں نے کہا کہ پنجاب میں ہمیں کوئی نمبر نہیں چائیے اور ہمارے پاس تحریک عدم اعتماد کے لیے نمبرز پورے ہیں۔

قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر سے متعلق انھوں نے کہا کہ شہباز شریف ضمانت پر رہا ہونے کے بعد آزاد ہیں اور کہیں بھی جاسکتے ہیں۔

شہباز شریف کےعشائیے سے متعلق انھوں نے کہا کہ شہباز شریف کا عشائیہ پارلمینٹرینز کے لیے تھا اور میں کوئی پارلمینٹرین نہیں ہوں اس لئے شرکت نہیں کی۔ جہاں شہبازشریف خود موجود ہوں وہ سب کی نمائندگی کرتے ہیں۔

مہنگائی سے متعلق انھوں نے کہا کہ گروتھ کے اعدادوشمار جو حکومت نے بتائے ہیں وہ درست نہیں۔ ملک میں ہر طبقہ مہنگائی سے متاثر ہوا ہے ۔ لوگ تباہ حال ہوچکے ہیں اور حکومت کو بددعا دے رہے ہیں۔ حکومت نے معیشت کے جو اعداد وشمار ظاہر کیے ان سے ان کے اپنے لوگ بھی متفق نہیں ہیں۔ مہنگائی اور معیشت کا پتہ غریب کے گھر سےچلتا ہے۔

ان سے سوال کیا گیا کہ صدارتی آرڈیننس کی وجہ سے کیا سینیٹر اسحق ڈار حلف اٹھانے آئیں گے یا سینیٹ کی سیٹ پی ٹی آئی کی جھولی میں جانے دے گی؟ اس پر انھوں نے جواب دیا کہ پہلے صدارتی آرڈیننس دیکھنے دیں اس کے بعد فیصلہ کیا جائے گا۔

چوہدری نثار کے اسمبلی واپسی پر مریم نواز خاموش رہیں اور کہا کہ میں صرف شیرکےنشان پرالیکشن لڑنےوالوں سےمتعلق بات کرسکتی ہوں۔

متعلقہ خبریں