گورنر بلوچستان مستعفی، شاہ زین بگٹی وزیراعظم کے معاون خصوصی مقرر

گورنر بلوچستان جسٹس ریٹائرڈ امان اللہ یاسین زئی نے اپنے عہدے سے استعفیٰ  دے دیا ہے۔
بدھ کو صدر مملکت عارف علوی کو  بھیجے گئے استعفے میں امان اللہ یاسین زئی نے لکھا کہ ’ میں گورنر بلوچستان کے عہدے سے سات جولائی 2021 کو مستعفی ہو رہا ہوں۔‘
مزید پڑھیں
خیال رہے چند ماہ قبل وزیر اعظم عمران خان نے اپنے دورہ کوئٹہ کے دوران گورنر بلوچستان کو ہٹانے کا فیصلہ کیا تھا۔ اپریل کے آخر میں ہونے والے اس دورے کے بعد وزیر اعظم نے گورنر بلوچستان کو خط لکھ کر ان سے عہدہ چھوڑنے کا کہا تھا۔
تاہم اس وقت امان اللہ یاسین زئی نے مستعفی ہونے سے انکار کیا تھا۔
یاد رہے کہ وفاقی حکومت نے اکتوبر 2018 میں محمد خان اچکزئی کے استعفے کے بعد امان اللہ یاسین زئی کو گورنربلوچستان  مقررکیا تھا۔
پشتونوں کے یاسین زئی کاکڑ قبیلے سے تعلق رکھنے والے جسٹس (ر) امان اللہ یاسین زئی بلوچستان کے چیف جسٹس بھی رہ چکے ہیں۔ اگست 2009 میں انہیں پی سی او کے تحت حلف اٹھانے پر برطرف کیا گیا تھا۔

شاہ زین بگٹی وزیراعظم کے معاون خصوصی مقرر

دوسری جانب وزیراعظم عمران خان نے شاہ زین بگٹی کو اپنا معاون خصوصی مقرر کردیا۔
کابینہ ڈویژن کی جانب سے بدھ کو جمہوری وطن پارٹی کے سربراہ شاہ زین بگٹی کو معاون خصوصی مقرر کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے چند روز قبل گوادر میں خطاب کے موقع پر ناراض بلوچ رہنماؤں سے بات کرنے کا اعلان کیا تھا۔ (فوٹو: ٹوئٹر)
شاہ زین بگٹی وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے ہم آہنگی بلوچستان ہوں گے۔ ان کا عہدہ وفاقی وزیر کے برابر ہوگا۔ شاہ زین بگٹی بلوچستان کے ضلع ڈیرہ بگٹی سے ممبر قومی اسمبلی ہیں۔
واضح رہے وزیراعظم عمران خان نے چند روز قبل گوادر میں خطاب کے موقع پر ناراض بلوچ رہنماؤں سے بات کرنے کا اعلان کیا تھا۔