ہنگامہ آرائی کے باعث قومی اسمبلی کا اجلاس ملتوی

اسپیکر کیلئے ایوان چلانا مشکل ہوگیا

قومی اسمبلی اجلاس میں کبھی حکومت اور اپوزیشن کا جھگڑا تو کبھی کورم پورا کرنا محال ہوگیا۔ ایوان چلانا اسپیکر کے لیے مشکل ہوگیا۔

قومی اسمبلی کا ایک گھنٹے سے بھی کم دورانیے کا اجلاس اور اس میں بھی شور شرابہ ہی دیکھنے کو ملا۔ فواد چودھری نے تقریر کرتے ہوئے کہا کہ شمالی وزیرستان میں چار خواتین کے قتل پر یکجہتی کا اظہار خوش آئند ہے۔ ساتھ ہی صوبائی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حلیم عادل شیخ کی گرفتاری کو سندھ حکومت کی کرپشن پر تنقید کا نتیجہ قرار دے دیا۔

فواد چودھری کی تنقید پر اپوزیشن بھی سیخ پا ہوگئی۔ شور شرابہ شروع ہوا تو پیپلز پارٹی کے آغا رفیع اللہ نے کورم کی نشاندہی کردی۔

کورم کی نشاندہی پر اسپیکر اسمبلی نے گنتی کرائی تو حکومت کو ایک بار پھر سبکی کا سامنا کرنا پڑا اور کورم پورا نہ ہونے پر اجلاس پیر تک ملتوی کردیا گیا۔

متعلقہ خبریں