یومِ علی کے جلوسوں کی اجازت نہ دینے کا فیصلہ

Lhr Ali Youme Shahdat

فوٹو: آن لائن

کرونا کیسز میں اضافے کے پیش نظر نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) نے یومِ علی کے موقع پر جلوسوں کی اجازت نہ دینے کا فیصلہ کیا ہے۔

اس حوالے سے فیصلہ وفاقی وزیر اسد عمر کی زیر صدارت این سی او سی کے اجلاس میں کیا گیا۔

این سی او سی کے فیصلے کے مطابق سخت ایس او پیز کے تحت مجالس کی اجازت ہوگی۔ یوم علی کی مجالس محدود پیمانے پر منعقد ہوں گی اور مجالس میں محدود افراد شریک ہو سکیں گے۔

صوبائی سطح پر فیصلوں پہ سختی سے عمل درآمد کروایا جائے۔ یوم علی کے جلوسوں پر پابندی کرونا کے بڑھتے کیسز کے باعث لگائی گئی ہے۔

یوم علی کی مجالس پر رمضان، تراویح اور مساجد والی ایس او پیز نافذ ہوں گی۔

کراچی: یوم علی کا جلوس روایتی انداز میں نکالا جائیگا

اجلاس میں وزیر داخلہ شیخ رشید، وزیر برائے مذہبی امور نور الحق قادری، قومی کوآرڈینیٹر این سی او سی لیفٹیننٹ جنرل جنرل حمودالزمان اور معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر فیصل سلطان بھی اجلاس میں شریک ہوئے۔

صوبائی سیکرٹریز اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے نمائندوں نے ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شرکت کی۔

واضح رہے کہ گزشتہ سال 15مئی کو کرونا وباء کے باعث یوم علی کے موقع پر جلوس نکالنے کی اجازت نہیں دی گئی تھی۔

اس سے قبل کراچی میں 4 مئی کو یوم علی پر جلوس روایتی انداز میں نکالنے کی اجازت دے دی گئی ہے۔ ڈپٹی کمشنر ساؤتھ نے جلوس سے متعلق تحریری احکامات جاری کر ديے ہیں، جس کے تحت جلوس کے مقامات کا تعین کیا گیا ہے۔

یوم حضرت علی کے موقع پر امام بارگاہوں، مساجد اور دیگر مقامات پر پر مجالس اور جلوسوں کے انعقاد کے موقع پر سیکیورٹی کے خصو صی انتظامات کئے جائیں گے۔

متعلقہ خبریں